Home > Srinagar News > محمد مقبول بٹ کے آ بائی قصبہ ترہگام میں تقاریب کا اہتمام

محمد مقبول بٹ کے آ بائی قصبہ ترہگام میں تقاریب کا اہتمام

محمد مقبول بٹ کے آ بائی قصبہ ترہگام میں تقاریب کا اہتمام
معمر والدہ کے حوصلے اب بھی بلند ،نوجوانوں نے مشعل بردار جلوس نکالا
ترہگام (کپوارہ)//آج کے روز جب19984میں لبریشن فرنٹ کے بانی اور شمالی کشمیر کے ترہگام قصبہ سے تعلق رکھنے والے محمد مقبول بٹ کو تہاڑ جیل میں تختہ دار پر لٹکایا گیا اور اس کے جسد خاکی کو وہا ں پر ہی دفن کیا ۔محمد مقبول بٹ کی برسی پر ہر سال ترہگام میں تقریب کا اہتمام کیا جاتا ہے جسمیں قرآن خوانی اور تعزیتی مجلس بھی منعقد کی جاتی ہیں ۔ محمد مقبول بٹ کے حوالہ سے یہ بات اکثر کی جاتی ہے کہ وہ بچپن سے ہی ذہین تھا اور ہر وقت اپنے ساتھیو ں کے ساتھ کشمیر کی آ زادی کی باتیں کر تا تھا۔ ترہگام کے بٹ خاندان سے تعلق رکھنے والوں کا کہنا ہے کہ ان کے عزائم آج بھی بلند ہیں اور یہی وجہ ہے کہ آ زادی کی خاطر انہو ں نے کوئی بھی قر بانی دینے سے گریز نہیںکیا ۔کپوارہ کرالہ پورہ شاہراہ کے برلب بٹ محلہ میں آج بھی ان کی یادو ں کو زندہ رکھا گیا جہا ں محمد مقبول بٹ نے اپنے جوانی کے دن گزارے ۔ مقبول بٹ کے لو احقین آج بھی اسی مکان میں ان کی برسی کے موقع پر تقریب کا اہتمام کرتے ہیں اور اس مکان کو دلہن کی طرح سجایا گیا ۔مقبول بٹ کی بہن محمودہ بیگم کا کہنا ہے کہ یہ مکان ان کے لئے ایک اثاثہ ہے ۔مقبول بٹ کی معمر والدہ شاہ مالہ بیگم کے حوصلے اب بھی جوان ہیں ۔مقبول بٹ کی 33ویں برسی کے موقع شاہ مالہ بیگم نے کشمیر عظمیٰ کو بتا یا کہ ان کی دلی تمنا ہے کہ وہ بھی کشمیر میں آ زادی کی بہار دیکھے تاکہ جو بیٹے انہو ں نے کھو دیئے ان کی قر بانی رنگ لائے ۔شاہمالہ بیگم کا کہنا ہے کہ آ زادی کی خاطر انہو ں نے اپنے4بیٹوں جن میں محمد مقبول بٹ ،حبیب اللہ بٹ ،غلام نبی بٹ اور منظور احمد بٹ کو کھو یا لیکن مجھے اس کا کوئی افسوس نہیں ہے اور میں فخر کرتی ہوں کہ میرے بیٹے کشمیر کی آزادی کی خاطر شہید ہوئے ہیں ۔ان کا مزید کہنا ہے کہ اب جبکہ میرا سب سے چھو ٹا بیٹا ظہور احمد بٹ زندہ ہے ان کو بھی طرح طرح کی اذیتوں سے گزر نا پڑا تاہم ظہور کو میری یہی وصیت ہے کہ اپنے بھائیو ں کے مشن کو ہر حال میں آگے بڑھاے۔شاہ مالہ بیگم جس کی صحت اب  ناسازگار رہتی ہے لیکن اپنے بیٹے کی برسی پر گویا وہ تندرست اور ٹھیک لگتی ہے اور وہ ہفتہ کو مہمانو ں کی خاطرداری کرنے کے لئے منتظمین کے ساتھ شانہ بہ شانہ کھڑی تھی۔ محمد مقبول بٹ کی 33ویں برسی پر ہفتہ کی شام نوجوانوں نے نمازمغرب کے بعد مشعل بردارجلوس نکال کر آ زادی اور اسلام کے حق میں نعرئہ بازی کی ۔نوجوانو ں نے محمد مقبول بٹ کے آ بائی گھر سے ایک جلوس نکالا جس کی قیادت مقبول بٹ کے برادر اصغر ظہور احمد بٹ کر رہے تھے ۔ہاتھوں میں مشعل لئے نوجوانو ں نے مین چوک ترہگام تک جلوس نکالا۔اس دوران ترہگام قصبہ میں فورسز کی بھاری جمعیت کو تعینات کیا گیا ۔

Share this News!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

shares