Home > Breaking News > بے نظیر میڈیکل کالج میرپورکے ملازمین نے بالآخر چپ کا روزہ توڑ دیا اور اپنے حق کے لئے نکل پڑے ،مطالبات حل نہ ہونے تک کام چھوڑہڑتال کا اعلان

بے نظیر میڈیکل کالج میرپورکے ملازمین نے بالآخر چپ کا روزہ توڑ دیا اور اپنے حق کے لئے نکل پڑے ،مطالبات حل نہ ہونے تک کام چھوڑہڑتال کا اعلان

چکسواری (قیصرعزیز سے) ملازمین کا ایک ہی نعرہ ، دو حق ہمارا۔ بے نظیر میڈیکل کالج میرپور کے سٹاف نے آج ہڑتال کا آغاز کر دیا۔ سٹاف ایکشن کمیٹی نے مطالبات پورے نہ ہونے تک ہڑتا ل جاری رکھنے کا عہد کر دیا ۔ ایپکا ضلع میرپور کے صدر نے بھی اظہار یکجہتی کر دی۔ چھے سال سے ایڈہاک پرلگے ملازمین نے پاکستان ٹیسٹنگ سروس کے انٹرویو بھی پاس کیے لیکن ان کو اب تک مستقل مزانیہ پر نہیں لا یا گیا۔ایم بی بی ایس میڈ یکل کا لج کے ملا زمین نے مطالبا ت نہ منظو ر ہو نے کی صور ت میں یکم جنو ر ی 2018ء کو احتجا ج کو اعلا ن کر دیا۔تفصیلات کے مطابق میرپور میں قائم محترمہ بے نظیر بھٹو شہید میڈیکل کالج میں پاکستان ٹیسٹنگ سروس (PTS) کا ٹیسٹ کوالیفائی کرنے کے باوجود گزشتہ چھ سال سے کنٹریکٹ پر کام کرنے والے سٹاف کا نارمل میزانیہ پر منتقلی اور دیگر دیرینہ مسائل کے حل کے لیے یکم جنوری 2018ء سے احتجاج کا اعلان۔ میڈیکل کالج سٹاف کی ایکشن کمیٹی نے اپنے مطالبات کی منظوری کے لیے وزیر اعظم آزاد حکومت ریاست جموں وکشمیر سمیت دیگر اعلی حکومتی عہدے داران کو متعدد بار تحریری درخواستیں کیں، اس کے باوجود تا حال مطالبات تسلیم نہیں کیے گئے۔سٹاف ایکشن کمیٹی کے مطابق ممکنہ احتجاج کا دائرہ کار مظفرآباد اور پونچھ میڈیکل کالجز تک بڑھایا جائے گا۔

Share this News!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

shares