Home > kashmir > بھارت کی طرف سے کنٹرول لائن پر جارحیت ناقابل قبول ہے ۔سردار خام حسین طاہر

بھارت کی طرف سے کنٹرول لائن پر جارحیت ناقابل قبول ہے ۔سردار خام حسین طاہر

راولپنڈی(ڈیلی کشمیر نیوز)جے کے پی پی کے مرکزی نائب صدرسردار خام حسین طاہر نے کہا ہے کہ بھارت کی طرف سے کنٹرول لائن پر جارحیت ناقابل قبول ہے ۔ بزدل دشمن بچوں کو نشانہ بنا کر سفاکی کی بدترین مثال قائم کررہا ہے۔ کنٹرول لائن پر بسنے والے شہریوں کو حکومت تحفظ فراہم کرے ۔ بنکر کی تعمیر کے ساتھ ساتھ انہےں محفوظ مقامات پر منتقل کیا جائے۔ زخمیوں کی فوری طبی امداد کے لئے کنٹرول لائن پر فیلڈ ہسپتال قائم کئے جائےں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پریس کو جاری کئے گئے اپنے خصوصی بیان مےں کیا ۔انہوںنے کہا کہ اقوام متحدہ اور عالمی برادری بھارت کے اس ظلم و بربریت کا نوٹس لے ۔ بھارت مقبوضہ کشمیر مےں بے بس ہوکر معصوم شہریوں کو نشانہ بنارہا ہے ۔مودی کی سفاکی جنگی مجرم کے مترادف ہے۔انہوں نے کہا کہ امریکہ کے صدر ٹرمپ مود ی کی زبان بولنے کے بجائے پاکستان کی قربانیوںاور اہمیت کو تسلےم کرے اور عدلےہ کے خلاف دشمنی کی زبان بولنے کی بجائے اپنے گریبان مےں جھانکیں ۔انہوں نے افغان سرحد کے قریب دھماکے کی شدید مذمت کی جس مےں آرمی کے کیپٹن سمیت چار جوان شہید ہوئے ۔ پاک فوج ہر محاذ پر قربانیاں دے رہی ہے خواہ وہ افغان سرحد ہو یا بھارت کے ساتھ کنٹرول لائن۔ پاک آرمی ملک کے اندر دہشت گردوں سے بھی نبردآزما ہے باقی لوٹ مار اور کرپشن میں لگے ہوئے ہےں۔انہوں نے کہا کہ 24 اکتوبر کا دن کشمیر کا قومی دن ہے۔ غازی ملت سردار محمد ابراہیم خان کی قیادت مےں تحریک آزاد ی کامیاب ہوئی اور ان کی قیادت مےں انقلابی حکومت کا قیام عمل مےں لایا گیا ۔ ڈوگرہ سامراج کو للکارنے والے غازی ملت ہی تھے ۔ انہوں نے کہا کہ آج آزاد کشمیر اگر آزا د نہ ہوتا تو یہاں بھی مقبوضہ کشمیر جیسے حالات ہوتے۔پےلٹ گن اور بھار ت کے دوسرے مظالم کا سامنا کرنا پڑتا۔ آج آزاد کشمیر کی سڑکوں پر گلے پھاڑ پھاڑ کر تقریر کرنے والے مہاراجہ کے دور مےں ےہ جرات نہےں کرسکتے تھے۔انہےں آزادی کی قدر کرنی چاہئے۔ معصوم بچوں اور عورتوں اور جوانوں کی شہادتیں رائیگاں نہیں جائےں گی۔کشمیر جلدآزاد ہوگا۔ راولپنڈی( )جے کے پی پی کے مرکزی نائب صدرسردار خام حسین طاہر نے کہا ہے کہ بھارت کی طرف سے کنٹرول لائن پر جارحیت ناقابل قبول ہے ۔ بزدل دشمن بچوں کو نشانہ بنا کر سفاکی کی بدترین مثال قائم کررہا ہے۔ کنٹرول لائن پر بسنے والے شہریوں کو حکومت تحفظ فراہم کرے ۔ بنکر کی تعمیر کے ساتھ ساتھ انہےں محفوظ مقامات پر منتقل کیا جائے۔ زخمیوں کی فوری طبی امداد کے لئے کنٹرول لائن پر فیلڈ ہسپتال قائم کئے جائےں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پریس کو جاری کئے گئے اپنے خصوصی بیان مےں کیا ۔انہوںنے کہا کہ اقوام متحدہ اور عالمی برادری بھارت کے اس ظلم و بربریت کا نوٹس لے ۔ بھارت مقبوضہ کشمیر مےں بے بس ہوکر معصوم شہریوں کو نشانہ بنارہا ہے ۔مودی کی سفاکی جنگی مجرم کے مترادف ہے۔انہوں نے کہا کہ امریکہ کے صدر ٹرمپ مود ی کی زبان بولنے کے بجائے پاکستان کی قربانیوںاور اہمیت کو تسلےم کرے اور عدلےہ کے خلاف دشمنی کی زبان بولنے کی بجائے اپنے گریبان مےں جھانکیں ۔انہوں نے افغان سرحد کے قریب دھماکے کی شدید مذمت کی جس مےں آرمی کے کیپٹن سمیت چار جوان شہید ہوئے ۔ پاک فوج ہر محاذ پر قربانیاں دے رہی ہے خواہ وہ افغان سرحد ہو یا بھارت کے ساتھ کنٹرول لائن۔ پاک آرمی ملک کے اندر دہشت گردوں سے بھی نبردآزما ہے باقی لوٹ مار اور کرپشن میں لگے ہوئے ہےں۔انہوں نے کہا کہ 24 اکتوبر کا دن کشمیر کا قومی دن ہے۔ غازی ملت سردار محمد ابراہیم خان کی قیادت مےں تحریک آزاد ی کامیاب ہوئی اور ان کی قیادت مےں انقلابی حکومت کا قیام عمل مےں لایا گیا ۔ ڈوگرہ سامراج کو للکارنے والے غازی ملت ہی تھے ۔ انہوں نے کہا کہ آج آزاد کشمیر اگر آزا د نہ ہوتا تو یہاں بھی مقبوضہ کشمیر جیسے حالات ہوتے۔پےلٹ گن اور بھار ت کے دوسرے مظالم کا سامنا کرنا پڑتا۔ آج آزاد کشمیر کی سڑکوں پر گلے پھاڑ پھاڑ کر تقریر کرنے والے مہاراجہ کے دور مےں ےہ جرات نہےں کرسکتے تھے۔انہےں آزادی کی قدر کرنی چاہئے۔ معصوم بچوں اور عورتوں اور جوانوں کی شہادتیں رائیگاں نہیں جائےں گی۔کشمیر جلدآزاد ہوگا۔

Share this News!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

shares